فرسٹ کیپٹل آف سوئٹزرلینڈ انوسٹمنٹ بینک ڈی آئی ایف سی ٹرسٹ لا کے استعمال کو فروغ دیتا ہے

دبئی، متحدہ عرب امارات، 27 مارچ 2012ء/پی آرنیوزوائر/–

تیزی سے تبدیل ہوتے عالمی ماحول میں مالیاتی خدمات کے پیشہ ور ادارے، جن میں ٹرسٹ اور اسٹیٹ پلاننگ کے شعبےبھی شامل ہیں، ہمیشہ صارفین کی ضروریات کو پورا کرنے کے انوکھے اور جدید طریقوں کی جانب دیکھ رہے ہیں۔

فرسٹ کیپٹل آف سوئٹزرلینڈ انوسٹمنٹ بینک (FCSIB) ڈی آئی ایف سی میں ایک لائسنس یافتہ اور باضابطہ وجود ہے جو انوسٹمنٹ بینکاری اور ویلتھ مینجمنٹ خدمات میں ایک مکمل مجموعہ پیش کر رہی ہے جو اسے اپنے صارفین کے لیے خصوصی طور پر تیار کردہ حل فراہم کرنے کے لیے حکمت عملی کے اعتبار سے بہترین پوزیشن میں لاتی ہے، ایک اہم بین الاقوامی مالیاتی مرکز کی حیثیت سے ڈی آئی ایف سی کی تصدیق شدہ حیثیت رکھتا ہے جو ایک مستحکم ملکی ماحول اور عالمی معیار قانون و ضوابط کا ڈھانچہ پیش کرتا ہے۔

ایف سی ایس آئی بی کے گروپ چیف آپریٹنگ آفیسر اور سربراہ ویلتھ مینجمنٹ انتھونی ڈی اینیلو کہتے ہیں کہ “ڈی آئی ایف سی دنیا بھر میں موجودہ دائرۂ اختیار کے ٹرسٹ قانون کے جامع مطالعے کے بعد 2005ء میں عمومی نافذ ٹرسٹ قانون کی پیروی کرتا ہے۔”

جناب ڈی اینیلو نے بات جاری رکھتے ہوئے کہا کہ “قانون وضاحت اور یقینی کیفیت فراہم کرتا ہے جو پیشہ ور اداروں کو اپنے صارفین کی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے زبردست لچک دیتے ہیں۔ ہم ایف سی ایس آئی بی میں ذاتی، کارپوریٹ اور خیراتی ٹرسٹ خدمات پیش کرتے ہیں جو ہمارے صارفین کے لیے خصوصی طور پر تیار کی گئی ہیں۔ اس کا ڈھانچہ روایتی یا شریعت کے مطابق ہو سکتا ہے۔”

قانون ڈی آئی ایف سی  میں وضعِ قوانین اور خدمات کے بنیادی ڈھانچے کا ایک حصہ تشکیل دیتا ہے جسے خطے اور اس سے کہیں آگے خاندان، خاندانی کاروباروں اور خاندانی دفاتر کی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے ڈیزائن کیا گیا ہے۔ ڈی اینیلو نے مزید کہا کہ “یہ ایک اہم نقطہ ارتکاز ہے، تاریخی طور پر دنیا بھر میں زیادہ تر خاندان کے تحت چلائے جانے والے کاروبار تیسری نسل سے آگے باقی نہیں رہ پاتے۔ اس امر کو یقینی بناتے ہوئے کہ خطے میں اقتصادی ترقی کے لیے ان کی بقا اور کامیابی اور نجی شعبے کی حرکت اہم ہے اور ہم یہاں ایف سی ایس آئی بی میں اس کو بہت سنجیدہ لیتے ہیں۔”

ایف سی ایس آئی بی متحدہ عرب امارات اور ملحقہ علاقوں میں ٹرسٹیز آف چوائس فار ایکسپیٹریٹ ایمپلائی بینیفٹ ٹرسٹس کی حیثیت دے رہا ہے۔ کیونکہ غیر ملکی تارکین وطن ملازمین کے لیے خلیج میں کوئی پنشن قانون سازی موجود نہیں ہے، جناب ڈی اینیلو اس کو ایف سی ایس آئی بی کے کارپوریٹ صارفین کے لیے ایک اہم موقع کی حیثیت سے دیکھتے ہیں کیونکہ وہ سمجھتے ہیں کہ یہ ماہر غیر ملکی تارک وطن افراد کی توجہ اپنی جانب مبذول کرانے اور انہیں برقرار رکھنے کا کلیدی طریقہ ہے۔

جناب ڈی اینیلو نے کہا کہ “ایف سی ایس آئی بی ایک خیراتی ادارہ جاری کرنے کے عمل میں ہے جو انفرادی شخصیات اور اداروں سے زکوٰۃ، خیراتی عطیات اور رضاکارانہ صدقات حاصل کرنے کا  حقدار ہوگا۔” انہوں نے گفتگو جاری رکھتے ہوئے کہا کہ “یہ خیراتی ادارہ قانون و ضوابط کی بہترین بین الاقوامی مشقوں کے ذریعے شفاف ہوگا اور ہر سال آڈٹ شدہ مالیاتی بیانات شایع کرے گا۔”

ایف سی ایس آئی بی کے بارے میں مزید معلومات کے لیے ملاحظہ کیجیے http://www.fcswiss.com

ذریعہ: فرسٹ کیپٹل آف سوئٹزرلینڈ انوسٹمنٹ بینک (ایف سی ایس)

مارین باتستا، +971-4-358-5773

Leave a Reply